Breaking

Saturday, May 23, 2020

طیارے کے زمین بوس ہونے کا منظر دیکھا تو چیخیں نکل گئیں


عینی شاہدین کے مطابق پائلٹ نے آبادی کو بچانے کی کوشش کی لیکن طیارے میں آگ بھڑکنے کے بعد وہ آبادی پر جاگرا۔
www.pakmediatv.com


 ایک نوجوان رحمان انصاری نے کہا کہ وہ گھر کے باہر کھڑے تھے کہ جہاز کے انجن کی آواز بدلی ہوئی سنائی دی، جہاز سے خوف ناک آواز نکل رہی تھی،میں نے اوپر دیکھا تو چند سیکنڈز میں جہاز ایک گھر کے اوپر گر چکا تھا۔

اس کے انجن میں آگ لگی ہوئی تھی، میں بھاگ کر تھوڑی دور پہنچا تھا کہ دھماکے کی آواز آئی اور پھر مسلسل عمارتوں کا ملبہ گرنے کی آوازیں بھی آ نے لگی، لوگوں کے چلانے اور چیخنے کی آواز سن کر واپس آیا تو گلی میں رش لگا ہوا تھا۔
www.pakmediatv.com

بعض عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ پائلٹ نے آبادی کو بچانے کی کوشش کی لیکن طیارے میں آگ بھڑکنے کے بعد وہ آبادی پر جاگرا ۔



گزشتہ روز تباہ ہونے والے پی آئی اے کے طیارے کی جائے حادثہ سے 97 افراد کی لاشیں نکال لی گئی ہیں۔
25 متاثرہ مکانات کو کلیئر کر دیا گیا ہے، جبکہ متاثرہ مکانات کے رہائشی مختلف مقامات پر رہائش پزیر ہیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کا یہ بھی کہنا ہے کہ آرمی کے دستے، رینجرز اور سماجی بہبود کی تنظیموں کے ذریعے ریسکیو آپریشن جاری ہے۔
طیارہ لینڈنگ اپروچ پر تھا کہ کراچی ایئر پورٹ کے جناح ٹرمینل سے محض چند کلومیٹر پہلے ملیر ماڈل کالونی کے قریب جناح گارڈن کی آبادی پر گر گیا۔

حادثے کے بعد جہاز میں آگ لگ گئی جس نے قریب کی آبادی کو بھی لپیٹ میں لے لیا، جبکہ طیارے کے مختلف حصے ٹوٹ کر آبادی میں بکھر گئے جنہوں نے مکانات کو نقصان پہنچایا تھا۔